Page 20
بن سید شاہ چراغ سے ہوئی۔ (۲) سید شرف دین: سید شرف دین نے ننگل ستوکلاں سے سکونت ترک کر کے فتوال سکونت اختیار کی۔ بی بی جیونی کا سید نصر اللہ شاہ بن سید شاہ چراغ سے نکاح ہوا۔ سید عطاء اللہ شاہ نے مستقل سکونت خانپور سیداں اختیار کر لی۔ (ا) سید کام بخش: سید کام بخش عربی اورفارسی کے عالم تھے۔ علم خدا شناس۔ حدیث فقہ کو خوب سمجھتے تھے۔ آپ کی شادی موضع بھٹے وڈ ہمراہ فضیلت بی بی سے ہوئی۔ اس سے دو لڑکے اور دو لڑکیاں پیدا ہوئی۔ (ا) سید معظم شاہ۔ (۲) سید قطب شاہ پسران۔ دختران۔ (ا) رقیہ (۲) رحم بی بی۔ رقیہ کی شادی ہمراہ سید علی اکبر بن سید عزت اللہ بن سید شاہ چراغ سے ہوئی۔ قبر سید کام بخش و سید عطاء اللہ شاہ خان پورسیداں میں ہیں۔ (ا) سید معظم شاہ: سید معظم شاہ نے ہمراہ مہتاب بی بی بنت سید امام شاہ بن سیّد سید محمد سے شادی کی۔ اس میں سے دو دختر ان پیداہوئیں۔ نام (ا) سید مبارک علی۔ (۲) سید نصرت علی پسران و دخترا ن چھوٹی عمر میں فوت ہو گئیں۔ (ا) سید مبارک علی کی شادی فتح بی بی دختر سید قطب شاہ ہوئی۔ اور اس سے دو پسران (ا) سید فرزند علی (۲) سید فضل احمد پیدا ہوئی۔ (۲) سید فضل احمد بچپن میں ہی فوت ہوگیا۔ (۲) سید نصرت علی: سید نصرت علی کی شادی ہمراہ آمیر بی بی ساکن موضع پنڈی جیو کے متصل کلانور ہوئی۔ اس سے دو لڑکیاں (ا) عمر بی بی (۲) کرم بی بی پیدا ہوئیں۔ عمر بی بی کی شادی ہمراہ سید فرزند علی بن سید مبارک علی سے ہوئی۔ اور کرم بی بی کی شادی ہمراہ سید غلام علی بن محفوظ علی شاہ سے ہوئی۔ بارِ دیگر نکاح کیا اور اس سے تین لڑکے پیدا ہوئے۔ تینوں لاولد فوت ہوئے۔ قبر سید معظم شاہ خانپور سیداں میں ہے۔ سید مبارک علی شاہ طب کے علم میں بہت ماہر تھے۔ اور خانپور سیداں سے سکونت ترک کر کے موضع بوڑہ ڈلہ ضلع گورداس پوررہائش اختیار کی۔ اور آپ کی قبر اسی جگہ نزد روضہ شاہ عثمان سندھی ہے آپ ۶۵ سال کی عمر گزار کر فوت ہوئی۔ (۱) سید فرزند علی: سید فرزند علی انگریزی راج میں معلم تھے۔ اور تمام عمر پڑھائی کا پیشہ اختیار کیا۔ آپ

20